Saturday, July 14, 2012

اردو سے ہندی سیکھیں

ہندی رسم الخط کو ناگری اور دیو ناگری بھی کہتے ہیں۔ دیو ناگری میں کل 50 حروف ہیں ۔ جن میں حروف صحیح مفرد 33 اور مرکب 4 ہیں ، اور حروف علت13 ہیں۔ اسے انگریزی کی طرح بائیں سے دائیں کی طرف لکھا جاتا ہے۔ حروف صحیح کو ہندی میں "وینجن" اور مرکب کو سینیُکت وینجن کہتے ہیں . اور حروف علت کو " سوَر " کہا جاتا ہے۔ عام طور پر کسی بھی حرف کو "اکشر" یا "ورنڑ" کہتے ہیں۔ اور حروف تہجی کو اکشر مالا یا ورنڑ مالا کہا جاتا ہے.





سوَر :۔


اَ अ

آ


اِ


اِ یْ


اُउ

اُوْ ऊ

اےए

اَے ऐ

اوओ

اَوْऔ

اَنْ अं

اَہْ(صرف سنسکرت کے لیے) अः

رِ (صرف سنسکرت کے لیے) ऋ

_________________________

وینجن:۔

کَ क

کھَ ख

گَ ग

گھَ घ

اَنْگَ ङ
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
چَ च

چھَ छ

جَ ज

جھَ झ

نِیاں ञ
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
ٹَ ट

ٹھَ ठ

ڈَ ड

ڈھَ ढ

اَنْڑَ ण
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تَ त

تھَ थ

دَ द

دھَ ध

نَ न
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
پَ प

پھَ फ

بَ ब

بھَ भ

مَ म
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔
یَ य

رَ र

لَ ल

وَ व

شَ श

ششَ ष

سَ ۔ ثَ स

ہَ ۔ ھَ ۔ حَ ह


_________________________

سینیُکت وینجن:۔

क्ष کْشَ
त्र تْرَ
श्र شْرَ
ज्ञ گْیَ



.................................................. ................................

Hindi Urdu Number (ginti)

ہندی گنتی

ہندی نمبر:۔
हिन्दी अंक :-






१ 1

२ 2

३ 3

४ 4

५ 5

६ 6

७ 7

८ 8

९ 9

० 0

ـــــــــــــــــــــــــ ــــــــــــــ

ایک تحقیق "شیخ محمد اکرام کی آب کوثر" کے مطابق ساری دنیا میں ہند سے ہند ہی سے گئے یعنی ہندوستان سے۔ مسلم عباسی خلافت کے دور میں کسی ہندو پنڈت وغیرہ کی خدمات لے کر ہندوستانی حساب کی کتاب کا ترجمہ کیا گیا۔ وہاں سے ہندسے مسلمانوں میں آئے۔ پہلے صرف اَحَدَ عَشَرَ یعنی عربی بیانیہ طریقے سے گنتی لکھی جاتی تھی۔ اور یورپ میں صرف رومن
i ii iii iv v vi vii viii ix
گنتی رائج تھی۔
مسلمانوں سے دیگر مغربی ممالک وغیرہ نے تعلیمی استفادہ کیا۔ پس یہ جدید انگریزی نمبر بھی ہندی کی بگڑی ہوئی یا سدھری ہوئی شکل ہے۔ جیسے اردو عربی ہندسے بھی ہیں۔

‎ - ١‎ - ٢‎ - ٣‎ - ٤‎ - ٥‎ - ٦‎ - ٧‎ - ٨‎ - ٩‎)
.................................................. ......
do akshar walay shabd

دو اکشر والے شبد


اب अब
تب तब
کب कब
جب जब
ٹب टब
گھر घर
...................................
چھت پر مت چڑھ
छत पर मत चढ़ |

نٹ کھٹ مت بن
नट खट मत बन |
...................................

اِس = इस
اُس = अस
اَس = उस
آس = आस
پس = पस
بس = बस




आग آگ
रब رب
सब سب
शर شر
रद رد
दर در




सर سر
रस رس
तप تپ
आब آب
पत پت
ईख ایکھ
ऒट اوٹ
................................
آم = आम
آج = आज






.................................................. ............................

Learn Hindi From Urdu



ہندی اور اردو میں لکھنے کے حوالے سے بہت سے اختلافات ہیں۔ سوَر کو کسی بھی وینجن سے پہلے
اب अब
اِس = इस
اَس = अस
اُس = उस
آس = आस
آم = आम
آج = आज
आग آگ
आब آب
ईख ایکھ
ऒट اوٹ
اس طرح لکھا اور پڑھا جا سکتا ہے۔
جبکہ وینجن اکشر کے بعد سوَر کا معاملہ اور ہے۔
जआ جَ آ
یہ لفظ جا نہیں ہے۔
कई ک اِی = کئی ہے
یہ لفظ "کِی" نہیں ہے۔
मऊ مَ اُو = مئُو ہے ۔
مُو نہیں ہے۔
चओ چَ او = چئو ہے ۔
چو نہیں ہے ۔
.................................................. ..................

ایک بڑا اختلاف

اُ उ


ऊ اُو



اور


ओ او


اَوْ औ


کا ہے۔
اُ उ اُلو جیسے لٍفظوں کے لیے
ऊ اُو اُون ، اُونٹ وغیرہ
ओ او او ٹ ، اوکھلی وغیرہ
اَوْ औ عَورت ، اَوسان وغیرہ کے لیے استعمال ہوتے ہیں
ان کی مکسنگ سے معاملہ گڑ بڑ ہو سکتا ہے۔